20

حاجی برکت بلیدئی اور عبداللہ گلاب کا ساتھیوں سمیت سینٹرل جیل تربت، ڈرگ ریبلیٹیش سینٹر اور دیگر مختلف سنیٹرزکا دورہ

تربت(گدروشیاپوائنٹ)ساچ فاؤنڈیشن کے بانی حاجی برکت بلیدئی، اوسٹ ویلفئیر آرگنائزیشن کے جنرل سیکرٹری عبداللہ گلاب، ڈبلیو ایچ او کے ایریا کوآرڈینیٹر ڈاکٹر منصور بلوچ نے سنٹرل جیل تربت کا دورہ کیا۔ حاجی برکت بلیدئی نے سنٹرل جیل کے تمام شعبوں کا دورہ کیا۔ جس میں میڈیکل، اسٹڈی روم اور انکے رہائش گاہ جو سنٹرل جیل میں فکشنل طریقے سے موجود ہیں۔ حاجی برکت بلیدئی کاکہنا تھا کہ قیدی جب قید ہیں تو اپنی سزا بھگت رہے ہیں۔ لیکن ان کے کچھ بنیادی حقوق ہوتے ہیں۔ جو انکو میسر ہوں۔ جیل سپرڈینٹ یاسین بلوچ نے کہاکہ ہمارے سنٹرل جیل کا سب سے اہم ترجیہات ہے کہ ہم قیدیوں کے بنیادی حق کو برقرار رکھیں۔بعد ازاں حاجی برکت بلیدئی اور عبداللہ گلاب نے کیچ تھیلیسیمیا کیئر سنٹر کا دورہ کیا۔ اس دوران کیچ تھیلیسیمیا سینٹر کے بانی ارشاد عارف نے سنٹر کے نئے بلڈنگ کے حوالے سے بریفنگ دی۔ جس میں آفس، ریسپشنز، بلڈ ٹرانسفرمیشن روم، لیبارٹری، مسجد، کچن اور اسٹاپ روم ہے۔ حاجی برکت بلیدئی نے کہا کہ معاشرہ اس وقت ترقی کرسکتا ہے جب نوجوان نسل اپنے بنیادی مسائل پر توجہ دیں۔ آپ نے یہ کام کرکے دیکھایا جو کہ قابل ستائش ہے۔ تھیلیسیمیا سنٹر سے بعد حاجی برکت بلیدئی، عبداللہ گلاب، ارشاد عارف، بلال عارف اور یاسر غنی نے ڈرگ ریبلیٹیش سنٹر تربت کا دور کیا جس میں 60 سے زائد نشہ کے ہادی زیرعلاج ہیں۔ حاجی برکت بلیدئی نے کہا کہ اس طرح کے اداروں کو منظم طریقے سے کام کرنا چائیے۔ چونکہ ہمارے معاشرے میں زیادہ تر نوجوان نشے کے عادی ہیں جن کی علاج کے ساتھ ساتھ زہنی تربیت لازم ہے۔ بعد ازاں حاجی برکت بلیدئی اور دیگر دوستوں نے سر زائد بلوچ کے ٹوپ نوچ اسکول کا دورہ کیا۔ سر زائد بلوچ کیچ کے بیشتر نوجوانوں کا استاد رہ چکے ہیں۔ انکی معاشرے کیلئے لازوال قربانیاں ہیں۔ زائد بلوچ کے قربانی ہمارے معاشرے کیلئے قابل ستائش ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں