16

بارکھان گرلز کالج کی غیر فعالیت اور انتظامیہ کی نااہلی طالبات کو تعلیم سے محروم کر رہی ہے۔ بلوچ اسٹوڈنٹس ایکشن کمیٹی

کوئٹہ(گدروشیاپوائنٹ)بلوچ اسٹوڈنٹس ایکشن کمیٹی کے مرکزی ترجمان نے اپنے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ بارکھان گرلز کالج کی مہینوں سے بندش اور انتظامیہ کی نااہلی بلوچ قوم کو تعلیم سے دور رکھنے کی پالیسیوں کا تسلسل ہے، ضلع بارکھان جو کہ خواندگی کے حوالے سے بہت پیچھے ہے اور پورے بارکھان میں تعلیم حاصل کرنے کا واحد زریعہ یہی ایک ادارہ ہے مگر بدقسمتی سے یہ ادارہ طالبات کو تعلیم مہیا کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے جو کہ انتہاہی تشویشناک ہے۔ مرکزی ترجمان نے اپنے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ بلوچستان میں چند ہی اعلی تعلیمی ادارے ہیں مگر بدقسمتی سے وہ بھی انتظامیہ کی غفلت اور نااہلی کی وجہ سے زیادہ تر بند رہتے ہیں جس کی وجہ سے طلباء و طالبات اپنا تعلیمی سفر جاری نہیں رکھ پاتے ، بارکھان گرلز کالج پورے ضلع کا واحد ادارہ ہے جہاں تقریباً تین سو سے زیادہ طالبات زیر تعلیم ہیں اور ادارے کے بند ہونے کی وجہ سے ان طالبات کا تعلیمی سال ضائع ہونے کا خدشہ ہے جو کہ انتہاہی تشویشناک ہے، ہم ضلع انتظامیہ و دیگر متعلقہ اداروں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ بارکھان گرلز کالج کی فعالیت کو جلد از جلد یقینی بنایا جائے بصورت دیگر تنظیم اس کے خلاف سخت احتجاجی عمل کا راستہ اختیار کرے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں